کیمیکلز اور فرٹیلائزر کی وزارت

مہنگی دواؤں سے متعلق قیمت پالیسی

Posted On: 04 FEB 2022 4:54PM by PIB Delhi

 

کیمکلز اور کھادوں کے مرکزی وزیر جناب منسکھ مانڈویا نے آج لوک سبھا میں  ایک تحریری جواب میں بتایا کہ 7دسمبر 2012 کو نوٹی فائی  کی گئی   دواسازی  سے متعلق   قومی  قیمت  پالیسی  کو وضع کیا گیا تھا۔اس کا مقصد   دواؤں کی قیمت کے لئے ایک ریگولیٹری فریم ور ک پیش کرنا تھا تاکہ فارما صنعت کی ترقی کو  تعاون دیتے ہوئے اختراع اور  مقابلہ جاتی  کے لئے  وافر موقع فراہم کرتے ہوئے مناسب قیمتوں پر لازمی دواؤں کی دستیابی کو یقینی بنایا جاسکے ۔اس  پالیسی  میں  ایک تبدیلی کی گئی ہے یعنی  اسے  مارکیٹ پر مبنی  قیمت کے مطابق رکھا گیا ہے جب کہ اس سے پہلے یہ ڈرگس  پالیسی  1994  کے تحت  لاگت  پر مبنی قیمت  پر دستیاب ہوتی تھیں۔

نیشنل  فارمیسیٹکل  پرازنگ  پالیسی  این  پی پی  2012  کے  تناظر میں حکومت نے  ڈرگ (ادویات ) قیمت کنٹرول آرڈر   2013   ( ڈی پی سی او – 2013 ) کو نوٹی فائی کیا ہے۔ ڈی پی سی او 2013  کی شقوں کے مطابق  لازمی دواؤں کی قومی فہرست میں   آنے والی سبھی  مجوزہ  دواؤں  کی سیلنگ قیمت  نیشنل فارمیسیٹیکل پرائز نگ اتھارٹی  این پی پی اے کے ذریعہ طے کی جاتی ہیں اور یہ  ملک بھر میں یکساں  ہے۔ ان دواؤں کے سبھی  مینوفیکچررس سے  کہا گیا ہے کہ وہ  سیلنگ پرائز کے مقابلے اپنی دوائیں  مساوی یا کم قیمت  پر فروخت کریں  ۔اس کے علاوہ  این  پی پی اے  غیر شیڈیو ل دواؤں  کی قیمتوں  پر نگرانی رکھے گی تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے  کہ  ان  دواؤں  کی زیادہ سے زیادہ خردہ قیمت  ( ایم آر پی) میں  10فیصدسے زیادہ کا اضافہ نہ ہوجو کہ  12  مہہینے پہلے تھیں۔

*************

ش ح۔ح ا ۔رم

U-12 38



(Release ID: 1796102) Visitor Counter : 120


Read this release in: English