امور صارفین، خوراک اور عوامی تقسیم کی وزارت

خریف مارکیٹنگ سیزن 21-2020 کے دوران کم سے کم امدادی قیمت ایم ایس پی کارروائیاں


50736.53 کروڑروپے کی ایم ایس پی قدر کے ساتھ خریف مارکیٹنگ سیزن  کے دوران خریداری کی کارروائیوں سے تقریباََ 22.84  لاکھ دھان کسانوں کو فائدہ ہوا

Posted On: 12 NOV 2020 6:31PM by PIB Delhi

نئی دہلی،  13 نومبر 2020: جاری خریف  مارکیٹنگ سیزن 21-2020  کے دوران حکومت  اپنی موجودہ  کم سے کم امدادی قیمت ایم ایس پی کی اسکیموں کے مطابق کسانوں سے اپنی ایم ایس پی پر خریف سیزن 21-2020  کی فصلوں  کی خریداری جاری رکھے ہوئے ہے۔

پنجاب ، ہریانہ ،اترپردیش ، تلنگانہ ،اتراکھنڈ ،تامل ناڈو ، چنڈی گڑھ ، جموں  وکشمیر  ، کیرالہ ، گجرات  اور آندھرا پردیش کی ریاستوں  اور مرکزکے زیر انتظام علاقوں میں   خریف 21-2020  کے لئے دھان کی خریداری  خوش اسلوبی سے جاری ہے ۔11نومبر 2020 تک  دھان کی 268.73 لاکھ میٹرک ٹن سے زیادہ کی خریداری کی گئی جبکہ پچھلے سال اسی مدت کے دوران 221.01 لاکھ میٹرک ٹن کی خریداری کی گئی تھی۔اس طرح  پچھلے سال کے مقابلے اس سال  خریداری میں  21.58 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔کل 268.73 لاکھ میٹرک ٹن کی خریداری میں سے اکیلے پنجاب نے 189.03  لاکھ میٹرک ٹن کی خریداری کی۔ جو کل خریداری کا 70.34 فیصدہے۔


https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image001AJPR.jpg Schemes.

 

50736.53 کروڑروپے کی ایم ایس ٹی قدر کےساتھ جاری خریف مارکیٹنگ سیزن کے دوران خریداری کی کارروائیوں سے تقریباََ 22.84  لاکھ کسانوں کو پہلے ہی فائدہ ہوا ہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002WEZF.jpg https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image003IJSS.jpg

          مزیدیہ  کہ ریاستوں سے ملنے والی تجاویز کی بنیاد پر تمل ناڈو مہاراشٹر ،تلنگانہ ، گجرات ، ہریانہ ،اترپردیش ،اوڈیشہ ،راجستھان اور آندھر ا پردیش ریاستوں کے لئے خریف مارکیٹنگ سیزن 2020  کے لئے دالوں اور تلہن  کی 45.10 لاکھ میٹرک ٹن کی خریداری کے لئے پرائزسپورٹ اسکیم  ( پی ایس ایس ) کے تحت منظوری دی گئی ۔اس کے  علاوہ  آندھرا پردیش  ،کرناٹک ،تمل ناڈو اور کیرالہ کی ریاستوں کے لئے 1.23 لاکھ میٹرک ٹن کھوپرے کی خریداری کے لئے بھی منظوری دی گئی۔

          دیگر ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کے لئے بھی  اسی وقت منظوری دی جائے گی جب  پی ایس ایس کے تحت دالوں ،تلہن اور کھوپرے کی خریداری کے لئے تجاویز موصول ہوں گی۔

          11 نومبر 2020 تک حکومت نے اپنی  نوڈل ایجنسیوں کے ذریعہ294.60 کروڑروپے کی ایم ایس پی قدر کے ساتھ  54788.28 میٹرک ٹن مونگ ،اڑد ، مونگ پھلی ، پوڈس اور سویابین کی خریداری کی جس سے تمل ناڈو ، مہاراشٹر ، گجرات  اور راجستھان میں  31865 کسانوں کو فائدہ ہوا ۔

          اسی دوران  52.40 کروڑروپے کی ایم ایس پی ویلیو کے ساتھ 5089 میٹرک ٹن کھوپرے کی خریداری کی گئی ،جس سے  کرناٹک اورتمل ناڈو میں  3961 کسانوں کو فائدہوا ۔ یہ خریداری 11 نومبر 2020 تک کی گئی تھی جبکہ  پچھلے سال اسی مدت کے دوران 293.34  میٹرک ٹن کھوپرے کی خریداری کی گئی تھی۔متعلقہ ریاستیں  اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کی سرکاریں  اس تاریخ سے خریداری  شروع کرنے کے لئے ضروری انتظامات کررہی ہیں ،جس کا فیصلہ خریف کی دالوں اورتلہن  کی  آمد  کی بنیاد پرمتعلقہ ریاستوں کے ذریعہ کیا گیا ہے ۔

 

 

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image00464K4.jpeg

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0054E3M.jpg

پنجاب ،ہریانہ ،راجستھان ،مدھیہ پردیش ، تلنگانہ ،آندھر ا پردیش ، مہاراشٹر اور گجرات میں ایم ایس پی کے تحت کپاس کے بیجوں کی خریداری کا عمل خوش اسلوبی سے جاری ہے ۔ 11 نومبر 2020 تک 1342878 کپاس کی گانٹھو ں کی خریداری کی گئی جس کی قیمت 3816.14 کروڑروپے ہے اس سے 262056 کسانوں  کوفائدہ  ہوا۔

*************

 

  م ن۔ح ا ۔رم

(13-11-2020

U- 7199-A



(Release ID: 1672559) Visitor Counter : 86


Read this release in: Hindi , Telugu , English , Manipuri